Page 1

‫جھوٹے مجدد کی کھانی ‪ ------‬سچے غلم کی زبانی‬

‫تحریر‬ ‫احسان اللہ طاھر‬


‫آج جس مضمون پر قلم اٹھانا پڑا ھے وہ ھے سلطانی صاحب یہ اپنے جھوٹے اور خود‬ ‫ساختہ الھام سنا کر دھوکا دے رھا ھے اور خود کو ان جھوٹے اور خودساختہ الھام کی‬ ‫بنیاد پر مجدد کھتا ھے میں آج سلطانی صاحب کے ان الھامات کی حقیقت بیان کرونگا‬ ‫کیوں کہ ان صاحب کے الھامات روز اتنی تعداد میں ھوتے ھیں اور ایسے بے سرو پا‬ ‫ھوتے ھیں اس لیے ان سبکو تو میں ڈسکس نھی کر سکتا کیونکہ اسمیں بھت زیادہ‬ ‫وقت درکار ھے اسلیے میں ان میں سے چند کو لے کر انکی حقیقت سامنے رکھونگا تا کہ‬ ‫طالب حق لوگوں کے سامنے حقیقت آ سکے سب سے پھلے ھم سلطانی صاحب کے ایک‬ ‫الھام‬ ‫ناصر احمد سلطانی ‪ ---‬امیر جماعت احمدیہ حقیقییہ الھام ھے جو سلطانی‬ ‫صاحب کو ھوا ھے اور میں نے یھی الھام سلطانی صاحب کے آگے رکھا اور کھا محترم‬ ‫اس الھام سے ظاھر ھوتا ھے کہ آپ نے اس الھام کے بعد خدا کے حکم سے اپنی‬ ‫جماعت کی بنیاد رکھی ھو گی؟؟ لیکن جواب نہ سلطانی صاحب نے دیا اور نا ھی‬ ‫انکے پاس موجود ھے کیونکہ وہ اپنی جماعت اپنے مجدد بننے سے بھت پھلے بنا چکے تھے‬ ‫ہ اور جماعت‬ ‫اور اپنی پوری کوشش کر چکے تھے کہ جو لوگ جماعت احمدیہ ربو ٰ‬ ‫احمدیہ لھور سے اپنا تعلق توڑ چکے تھے انکو اپنی جماعت میں شامل کریں اور محترم‬ ‫اسمیں کافی حد تک ناکام ھو چکے ھیں کیونکہ سلطانی صاحب پھلے سے ھی جماعت‬ ‫بنا کر اسکے امیر بن چکے تھے اور الھام بعد میں ھوا جس سے ثابت ھوتا ھے کے یہ‬ ‫انکے دل کی بات تھی جو سامنے آی ورنہ بننے سے پھلے الھام ھوتا نا کہ بعد میں‬ ‫‪--‬دوسرا الھام‬

‫)‬

‫انتخاب )یعنی الیکشن ‪ -‬الیکشن میں کامیابی‬

‫یہ الھام سلطانی صاحب کو اس وقت ھوا جب امریکہ کے الیکشن سے کوی دو یا تین‬ ‫ماہ رھتے تھے اس میں کسی کی جیت یا ھار کا نھی بتایا گیا ھے اب جسکی بھی‬


‫جیت ھونی تھی سلطانی صاحب نے نعرہ لگا دینا تھا کہ میرا الھام سچا ثابت ھو گیا‬ ‫ھے‬


‫اور یھی ھوا باراک حسین اوبامہ کی جیت پر سلطانی صاحب نے ڈھول بجا دیا حالنکہ‬ ‫یہ صاف دھوکا تھا خصوصن اس صورت میں جب صلطانی صاحب خود لکھ چکے تھے‬ ‫کہاوبامہ کو روتے ھوے دکھایا گیا ھے ایسا لگتا ھے کہ لوگوں نے سوال اٹھایا ھے تو‬ ‫محترم جیت پر سوال نھی اٹھایا جاتا اعتماد کیا جاتا ھے ایسے الھامات جن کا نا کوی‬ ‫سر ھو اور نا ھی پیر وہ کوی دلیل نھی ھوا کرتے جبکہ سلطانی صاحب انھی کو‬ ‫دلیل بنانے پر بضد ھیں‬

‫‪--‬تیسرا الھام‬

‫دیکھا کہ ھمسب فیملی مل کر ناشتہ کر رھے ھیں بیٹا عبدالسلم “‬ ‫سلطانی ایک پراٹھا مزید لیتا ھے تو میں مزاقن کھتا ھوں کہ تیسرا یا چوتھا‪ -‬اس طرح‬ ‫چھوٹی بیٹی رجا طاھر سلطانی بھی پراٹھا لیے بیٹھی ھے خوب گھما گھمی گھر‬ ‫“ والوں کی لگ رھی ھے‬


‫جب اس الھام کے بارے میں میں نے سلطانی صاحب سے پوچھا کہ اس میں پیش گوی‬ ‫کیا ھے تو سلطانی صاحب پھلے تو آییں بٰاییں شاییں کرتے رھے لیکن کچھ دن بعد جواب‬ ‫دیا وہ بھی ملحظہ فرماییں‬ ‫لیکن اس خاص خواب کے اندر پیشگوی پوری ھو چکی ھے یہ اس وقت کی بات “‬

‫ھے جب میرے بچوں کو جدا جدا ملکوں میں رھنا پڑ رھا تھا اور بظاھر انکے اکٹھے‬ ‫ھونے کی صورتحال بھت مخدوش تھی کہ پتا نھی وہ اکٹھے مل کر بیٹھ بھی سکیں‬ ‫گے یا نھیں اور میں اور میرے دونوں بیٹے جس ملک میں موجود تھے وھاں ھمیں آٹا‬ ‫میسر نھی تھا اور کیی ماہ میں بھی ھم انتظام نھیں کر سکتے تھے کہ پراٹھا کھانے‬ ‫“کا انتظام ھو‬

‫جب یہ جواب سلطانی صاحب کی طرف سے مل تو میں حیران رہ گیا‬

‫کہ سلطانی‬

‫ی ھے اور یہ صاحب اس مشھور حدیث کو بھی بھول گیے‬ ‫صاحب کا مجدد ھونے کا دعو ٰ‬


‫ھینجسکا مطلب یہ بنتا ھے‬ ‫کوی شخص اسوقت تک مومن نھی ھو سکتا جب تک اپنے بھای کے لیے وھی‬ ‫پسند نہ کرے‬ ‫جو اپنے لیے پسند کرتا ھے‬

‫نیز سلطانی صاحب بار بار یہ لکھ چکے ھیں کہ وہ سادہ غزا مطلب صرف ابلی ھوی‬ ‫کھاتے ھیں اور چکنای والے خود بھی نھی کھاتے اور اپنے مریضوں کو بھی روکتے ھیں‬ ‫جوابن میں نے یہ سب باتیں لکھیں اور ساتھ ھی انکی‬ ‫‪www.drahmadswhho.com‬‬

‫کی فوٹو لے کر انکے سامنے رکھی اپنی ویب سایٹ‬ ‫جسکے الفاظ درج زیل ھیں‬

‫ھم اپنی روز مرہ غزا سے آیل گھی اور گرم مسالہ کے تمام ایٹمز بشمول “‬

‫سرخ مرچ مکمل طور پر خارج کر دیں میں یہ چیزیں کم کرنے کا نھی کھہ رھا بلکہ‬ ‫مکمل طور پر خارج کرنے کا کھہ رھا ھوں ھم اپنے گھر بھی مزکورہ بال طریق پر‬ ‫ھی سالن بناتے ھیننہ مرچ مصالحہ استعمال کرتے ھیں اور نہ ھی گھی آیل استعمال‬ ‫کرتے ھیں سالن بھت لزیز اور خوشبودار ھوتا ھےکیی بار ھم نے ان لوگوں کوجو اسکے‬ ‫لزیز یا زایقے دار ھونے پر شک کرتے تھے کھلیا سبکو پسند آیا گی ٹین اسلم آباد سے‬ ‫ایک فیملی ھمارے گھر علج کے سلسلے میں آیا کرتی تھیانھیں جب ضرورت ھو تو‬ ‫“ھمارے ھی ھسپتال سے ادویات لیتے ھیں‬ ‫یہ سوال بنا کر میں نے سلطانی صاحب کے سامنے رکھے اور عرض کیا کہ‬


‫جناب آپ دوسروں کو گھی اور چکنای کی چیزیں کھانے سے روکتے ھیں اور بار بار‬ ‫کھتے ھیں کہ میں خود بھی نھی کھاتا اور ساتھ میں آپ پراٹھے اور مصالحے دار‬ ‫چیزیں کھانے کی کوشش بھی کرتے ھینکیا ایک مجدد کا لوگوں سے جھوٹ بولنا جایز‬ ‫ھے؟؟ کیا ایک ایسا آدمی مجدد ھو سکتا ھے جس کا جھوٹ اسکے اپنے ھی الفاظ سے‬ ‫ثابت ھو چکا ھو؟؟ آج تک سلطانی صاحب اسکا جواب نا دے سکےبار بار کی یاد دھانی‬ ‫بھی کارگر ثابت نا ھوی اور جواب نا مل‬

‫‪--‬چوتھا الھام‬


‫یوسف عبداللہ ڈونالڈ پیٹرسن‬

‫سلطانی صاحب کو کچھ عرصہ پھلے ان صاحب کی قبولیت کا الھام ھوا جس کے‬ ‫معین الفاظ مجھے نھی مل سکے لیکن اسی طرح کا ایک الھام موجود ھے ٹھیک دو‬ ‫مھینے بعد سلطانی صاحب نے فیسبک پر اعلن کر دیا کہ ان صاحب نے سلطانی صاحب‬ ‫کو مجدد تسلیم کر لیا ھے سلطانی صاحب سے پوچھنے پر پتا چل محترم امریکہ میں‬ ‫ی ڈگری حاصل کر رھے ھیناور سلطانی صاحب سے بھت مخلص ھیں بعد‬ ‫قانون کی اعل ٰ‬ ‫از تحقیق انکشاف ھوا کہ سلطانی صاحب نے انکا جعلی فیس بک اکاونٹ بنا کر اس‬ ‫میں اپنے آپکو تسلیم کروا دیا جبکہ اصل آدمی سلطانی صاحب کو جانتا تک نھی ھے‬ ‫مزید تحقیق کی تو انکشاف ھوا کہ محترم قتل کے الزام میں امریکہ کی جیل میں‬ ‫پچھتر سال کی قید با مشقت کاٹ رھے ھیں‬ ‫یوسف عبداللہ ڈونالڈ پیٹرسن‬ ‫سلطانی صاحب کو کچھ عرصہ پھلے ان صاحب کی قبولیت کا الھام ھوا جس کے‬ ‫معین الفاظ مجھے نھی مل سکے لیکن اسی طرح کا ایک الھام موجود ھے ٹھیک دو‬ ‫مھینے بعد سلطانی صاحب نے فیسبک پر اعلن کر دیا کہ ان صاحب نے سلطانی صاحب‬ ‫کو مجدد تسلیم کر لیا ھے سلطانی صاحب سے پوچھنے پر پتا چل محترم امریکہ میں‬ ‫ی ڈگری حاصل کر رھے ھیناور سلطانی صاحب سے بھت مخلص ھیں بعد‬ ‫قانون کی اعل ٰ‬ ‫از تحقیق انکشاف ھوا کہ سلطانی صاحب نے انکا جعلی فیس بک اکاونٹ بنا کر اس‬ ‫میں اپنے آپکو تسلیم کروا دیا جبکہ اصل آدمی سلطانی صاحب کو جانتا تک نھی ھے‬ ‫مزید تحقیق کی تو انکشاف ھوا کہ محترم قتل کے الزام میں امریکہ کی جیل میں‬ ‫پچھتر سال کی قید با مشقت کاٹ رھے ھیں‬


‫سلطانی صاحب سے رابطہ کیا گیا کہ جناب اس کے بارے میں کیا فرماتے ھیں جواب‬ ‫نوکمنٹ کھا گیا کہ مجھے الھام ھوا میں نے شایع کر دیا کہا گیا کہ جناب موصوف‬ ‫ی ڈگری حاصل کر رھے تھے مگر یہ محترم تو قتل کے جرم کا ارتکاب کے‬ ‫قانون کی اعل ٰ‬ ‫بعد اپنی سزا کاٹ رھے ھیں آج تک جواب کے منتظر ھیں اسکا جواب مجھے فیس بک‬ ‫سے بلک کر کے دیا گیا‬ ‫اب سلطانی صاحب کے کارناموں کا زکر کرتے ھیں آپ نے دیکھا ھوگا کہ اکثرسلطانی‬ ‫صاحب سے جب جواب نا بن پاے تو چیلنج دے دیتے ھیں اور شور مچا دیتے ھیں کہ میرے‬ ‫ے کے اوایل میں ھی ملک بشیر اللہ خان راسخ نے‬ ‫مقابلے پر کوی نھی آتا لیکن انکے دعو ٰ‬ ‫انکو چیلنج دیا تھا جو آج تک موجود ھے سلطانی صاحب اپنی عادت کے مطابق اس‬ ‫چیلنج سے بھاگ گیے‬


‫ھیں ھم نے وہ چیلنج ملک صاحب کی اجازت سے پھر سلطانی صاحب کے سامنے رکھا‬ ‫اور یاد دھانی کروای اور ساتھ ھی جواب بھی طلب کیامگر جواب ھسب سابق ندارد‬ ‫مطلب سلطانی صاحب کھیں بھی جم کر مقابل پر آنے کو تیار نھی ھو تے اب سلطانی‬ ‫صاحب کے عقیدے پر نظر ڈالتے ھیں جو کہ سراسر خلف قرآن ھیں اور ان میں جابجا‬ ‫تضاد نظر آتا ھے سلطانی صاحب کا عقیدہ ھے کہ حضرت محمد کے بعد کوی نبی نھی‬ ‫آسکتا جب ھم نے سلطانی صاحب کو یاد دلیا کہ جناب اس طرح حضرت مرزا صاحب‬ ‫بھ خاتم المجدد ھیں تب تو حضرت مرزا صاھب کے بعد کوی مجدد بھی نھی آسکتا‬ ‫جناب نے کوی جواب نھی دیا‬


‫اسی طرح جناب ایک طرف کھتے ھیں کہ کوی نبی نھی آسکتا لیکن جنبہ صاحب سے‬ ‫نبوت کے موضوع پر مقابلہ کرتے ھوے لکھتے ھیں کہ‬ ‫“کیا کوی عورت اور مخنث نبی بن سکتے ھیں“‬

‫اس سوال سے جناب کی علمی قابلیت کی بھی قلعی کھلتی ھے کیونکہ قرآن مجید تو‬ ‫کھتا ھے کہ کبھی کسی عورت کو نبی نھی بنایا گیا اب سلطانی صاحب نے یہ خلف‬ ‫عقل اور خلف قرآن سوال کر کے آخر کیا ثابت کیا؟؟‬


‫اسی طرح سلطانی صاحب منصور صاحب امیر جماعت احمدیہ اصلح پسند یوکے سے‬ ‫گفتگو کے دوران مان گیے کہ حضرت مرزا غلم احمد صاحب نبی تھے لیکن اگلے دن پھر‬ ‫مکر گیے اس سلسلے میں منصور صاحب لکھتے ھیں‬ ‫اور آخر کار با آواز بلند کھاگیا کہ نبوت کے مسلے پر جماعت احمدیہ حقیقی اور “‬

‫جماعت احمدیہ اصلح پسند میں کوی اختلف نھی‬

‫اور اس رضا مندی پر میٹنگ کو‬ ‫“ختم کیا گیا‬

‫پھر کچھ ھی آگے منصور صاحب لکھتے ھیں اگلے روز کے بارے میں‬ ‫اس قدر عرض کرتا ھوں کہ اس دن سلطانی صاحب نے مرزا صاحب کی ظلی “‬

‫“بروزی اور امتی نبوت سے انکار کر دیا‬


‫ی تو مجدد ھونے کا کر رھے ھیں‬ ‫اس بات سے واضح ھوتا ھے کہ سلطانی صاحب دعو ٰ‬ ‫لیکن انکی اپنی تجدید ھونی ھے اور وہ خود اصلح کے طلبگار ھیں‬

‫سلطانی صاحب حضرت مرزا غلم احمد صاحب کو مجدد صدی چہار دہم مانتے ھیں اور‬ ‫انکو حکم و عدل کہتے ھیں‬ ‫اب میں آخر میں حضرت مرزا غلم احمد صاحب اور سلطانی صاحب کے الفاظ آپکے‬ ‫سامنے رکھتا ھوں نبوت کے موضوع پر تاکہ اپکو پتا چل سکے کہ سلطانی صاحب کے‬ ‫عقیدے اور حضرت مرزا غلم احمد صاحب کے عقیدے میں زمین آسمان کا فرق ھے‬


‫حضرت مرزا غلم احمد صاحب‪ ---‬پس اس وجہ سے نبی کا نام پانے کے لیے میں ھی‬ ‫مخصوص کیا گیا ھوں‬

‫سلطانی صاحب ‪--‬‬

‫باقی اولیاے امت کی طرح آپکے لیے نبی کا لفظ استعمال ھوا )‬ ‫)انالللہ و انا الیہ راجعون‪--‬ناقل‬

‫حضرت مرزا غلم احمد صاحب‪ ---‬غرض اس حصہ وحی الہی میں اور امور غیبیہ میں‬ ‫اس امت میں سے میں ھی ایک فرد مخصوص ھوں‬

‫سلطانی صاحب ‪ --‬نہ صرف یہ کہ ایسے افراد حضرت مرزا صاحب سے پہلے امت‬ ‫محمدیہ میں ہوتے رھے بلکہ ایسے بکثرت مکالمہ و مخاطبہ پانے والے افراد آییندہ بھی‬ ‫قیامت تک ھوتے رھیں گے جن کے لیے نبی کا لفظ استعمال ھو‪ ) -‬انالللہ و انا الیہ‬ ‫)راجعون‪--‬ناقل‬

‫حضرت مرزا غلم احمد صاحب‪---‬‬

‫اور جس قدر ابدال اور اقطاب اس امت میں گزر‬

‫‪-‬چکے ھیں انکو یہ حصہ کثیر اس نعمت کا نھی دیا گیا‬

‫نوٹ ‪ ---‬سلطانی صاحب کے الفاظ اور حضرت مرزا غلم احمد صاحب کے الفاظ (‬

‫میں نے سلطانی صاحب کے اس خط سے لیے ھیں جو سلطانی صاحب نے جنبہ صاحب کو‬ ‫)لکھے ھیں‪----‬ناقل‬


‫ختم شد‬


‫مصنف‬ ‫)احسان اللہ طاھر )سچا غلم‬

سچا غلام  
Read more
Read more
Similar to
Popular now
Just for you